No More Unwanted Hair Easy Remedy

اب غیر ضروری بالوں سے چھٹکارا پائیں چند آسان طریقے درجہ ذیل ہیں

11ہلدی اور دودھ
ایک کھانے کا چمچ ہلدی اور ایک کھانے کا چمچ دودھ لے کر مکس کرلیں، اب اس پیسٹ کو مطلوبہ جگہ پر لگا کر خشک ہونے دیں اور پھر صاف پانی سے دھو لیں۔

ہلدی اور پانی : 
اگر دودھ دستیاب نہ ہو تو اوپر دیئے گئے طریقے میں دودھ کی جگہ پانی شامل کرلیں، باقی طریقہ ویسے ہی رہے گا۔

انڈے کی سفید :
مناسب مقدار میں مکئی کا آٹا اور چینی لے کر ایک انڈے کی سفیدی میں مکس کرلیں۔ مکسچر کو اچھی طرح پھینٹ لیں اور پیسٹ بنالیں ۔ اب اس پیسٹ کوآدھے گھنٹے کے لئے ہونٹوں کے اوپر والے بالوں پر لگالیں اور پھرٹھنڈے پانی سے دھولیں ۔ ہفتے میں تین مرتبہ دھرائیں

 آٹا:
آٹا ، دودھ اور ہلدی لے کر اچھی طرح مکس کرلیں اور گاڑھا پیسٹ بنالیں۔ اس پیسٹ کو بالوں پر لگالیں اور خشک ہونے پر دھولیں۔

 لیموں اور پانی :
دولیموں لے کر ان کا رس نکال لیں ، تھوڑا سا پانی شامل کریں اور چینی ملا کر مکس کرلیں ۔ یہ ایک پتلا سا پیسٹ بن جائے گا ۔ اس کوبالوں پر لگالیں اور پندرہ منٹ بعد دھولیں ۔

  :شوگر ویکسنگ
بیوٹی پارلر میں عموماً ویکسنگ کے ذریعے غیر ضروری بال ختم کئے جاتے ہیں ۔ شوگر ویکسنگ نارمل ویکسنگ کے مقابلے میں بہتر ہوتی ہے ۔ ویکسنگ کا طریقہ ذیل میں دئیے گئے لنک پر موجود ہے ۔

 تھریڈنگ:
ایک دھاگہ لے کر دائرہ سا بنالیں اور اس کو بالوں کے گرد لاتے ہوئے ان کو ریمو و کریں ۔ تھریڈنگ بالوں کے رُخ کے مخالف سمت میں کریں ۔

 دھی ، ہلدی اور بیسن : 
برابر مقدار میں دھی ، بیسن اور ہلدی ملا کر ایک پیسٹ بنالیں ۔ اس پیسٹ کو بالوں پر نرمی کے ساتھ لگا کر پندرہ منٹ کے لئے چھوڑ دیں اور پھر صاف پانی سے دھولیں ۔

چینی :
ایک برتن میں ایک منٹ کے لئے چینی گرم کریں اور پھر تھوڑا سا لیموں کا رس ملا کر گاڑھا پیسٹ بنالیں ۔ ٹھنڈا ہونے پر ہونٹوں کے اوپر لگائیں ، پھر کپڑے کے ذریعے دائرے کی شکل میں مساج کریں اور پھر بالوں کو مخالف سمت میں کھینچ لیں ۔

 قینچی کا استعمال : 
اگر بال زیادہ ہوگئے ہوں تو قینچی کے ذریعے اُن کو کاٹ لیں ۔

چنے کی دال کا آٹا : 
چنے کی دال کے آٹے کو ہلدی اور پانی میں ملا کر پیسٹ بنا لیں ۔ تھوڑی سی ملائی شامل کردیں اور اس کو اپنے ہونٹوں کے اوپر جگہ پر بالوں پر لگادیں ۔ خشک ہونے کا انتظار کریں اور پھر بالوں کی مختلف سمت میں کھینچ کر ختم کریں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*